وہی دل کے ٹہر جانے کا موسم

کوئی بات ہے تیری بات میں

حلالِ جرات

ایسا کبھی نہیں ہوتا